خود کو مسلم ظاہر کرنے’ پر احمدی گرفتار’

LAHORE Sun Dec 15, 2013 7:18am GMT

لاہور: ایک 72 سالہ برطانوی ڈاکٹر کو ‘خود کو مسلمان ظاہر کرنے پر’ لاہور سے گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ان کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ مسعود احمد 1982ء میں فارمیسی کھولنے کے غرض سے پاکستان لوٹے تھے۔ اس سے قبل وہ لندن میں اپنے اخراجات پورا کرنے کے لیے دہائیوں تک مقیم رہے اور وہیں روزگار حاصل کرنا بھی شروع کیا۔

وہ ایک احمدی ہیں۔ 1984ء کے ایک پاکستانی قانون کے مطابق احمدی غیر مسلم ہیں اور خود کو مسلمان ظاہر کرنے یا مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے پر انہیں تین سال تک کی سزا ہوسکتی ہے۔

کچھ علماء احمدیوں کو قتل کرنے پر جنت میں مقام دلوانے کا وعدہ بھی کرتے ہیں۔

تین سال قبل لاہور میں جمعے کے روز دو حملوں کے دوران 86 احمدیوں کو ہلاک کردیا گیا تھا۔

حالیہ عرصے میں اس طرح کا کوئی بڑا واقعہ پیش نہیں آیا تاہم گزشتہ سال مختلف واقعات میں 20 احمدیوں کو ہلاک کیا گیا تھا جبکہ 2009ء میں یہ تعداد 11 رہی تھی۔

دوسری جانب ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی بھی بڑھتی جارہی ہے۔

Read more: